110

ادراک(قابلِ رحم) منعم مجید)

وہ کہتے ہیں ’’تم خواب بہت دیکھتے ہو ‘‘۔میں کہتا ہوں ’’ میں تُمہارا مستقبل محفوظ کرتا ہوں‘‘۔ وہ کہتے ہیں ’’تم جاہل اور بہرے ہو‘‘۔ میں کہتا ہوں’’ہاں میں تُمہاری بات سنتا اور سمجھتا ہوں‘‘۔وہ کہتے ہیں ’’ ہم تُمہاری آوازکبھی نہ سنیں گے‘‘۔ میں کہتا ہوں ’’ہاں یہ اچھا ہے تم روح کی بازگشت ہرگزبرداشت نہ کرپائوگے ‘‘۔ وہ کہتے ہیں ’’ہم تُمہارے قریب کبھی نہ آئیں گے‘‘۔ میں کہتا ہوں ’’ہاں یہ ٹھیک ہے ،گیڈر تعداد میں زیادہ ہونے کے باوجود شیر سے کوسوں پرے رہتے ہیں ‘‘۔ وہ کہتے ہیں’’ہم تُمہیں مار ڈالیں گے‘‘۔ میں کہتا ہوں ’’ ہاں یقینا تُمہیں ایسا ہی کرنا چاہیے کیونکہ اسی میں تُم اور تُمہاری نسلوں کی بقا ہے ‘‘۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں